سکاوٹس اتحاد اور رواداری کا وعدہ لیکر مثبت تبدیلی کا سمبول ہے۔

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

کوئٹہ پریس ریلیز
بلوچستان بوائے سکاوٹس ایسوسی ایشن کے رہنماوں نے کہا ہے کہ سکاوٹنگ کا مقصد صرف ڈسپلن پیدا کرنا اور اتحاد کا مظاہرہ کرنا نہیں بلکہ مشکل اوقات میں لوگوں کی خدمت کرنا بھی ہے۔ سکاوٹنگ کے فروغ سے نوجوانوں کی ذہنی نشوونماء کی جاسکتی ہے اور ان میں مثبت تبدیلی لائی جاسکتی ہے سکاوٹنگ کے بانی لارڈ سٹیفن سمیتھ بیڈن پاول کے سالگرہ اور سکاوٹنگ کے عالمی دن کی مناسبت سے منعقدہ تقریب سے سیکرٹری بلوچستان بوائے سکاوٹس ایسوسی ایشن صابر حسین، آفاق کے سینئر ایرا منیجر نعیم رند، بوائے سکاوٹس کے طلعت جہاں، سعد وقاص اور دیگر نے خطاب کیا۔ تقریب میں آفاق سکاوٹس گروپ، سکھ برادری کے سکاوٹس کے علاوہ ابو تراب سکاوٹس گروپ نے بھی شرکت کیں۔ اس موقع پر مقررین نے کہا کہ سکاوٹنگ کے بانی نے سکاوٹنگ کا آغاز اس مقصد کیلئے کیا کہ بچپن سے لیکر جوانی تک لوگوں کو معاشرتی مسائل اور مشکلات سے نمٹنے کیلئے تیار کیا جاسکے۔ بلوچستان کے صورتحال کے پیش نظر سکاوٹس کو قدرتی اور انسانی آفات سے نمٹنے کی تربیت دی جاتی ہے اور انہیں معاشرے کے کار آمد شہری بنانے کیلئے مواقع دیئے جاتے ہیں۔ مقررین نے کہا کہ سکاوٹس نوجوانوں میں مثبت تبدیلی کیلئے سرگرم عمل رہتے ہیں جبکہ اپنے اداروں میں ڈسپلن پیدا کرنے کا پابند رہتا ہے۔ ڈسپلن، رواداری اور اتحاد سکاوٹس کی بنیادی ذمہ داریاں ہیں۔ اس موقع پر سکاوٹنگ کے بانی لارڈ سٹیفن سمیتھ بیڈن پاول کے سالگرہ کا کیک بھی کاٹا گیا اور انہیں زبردست خراج تحسین پیش کیا گیا۔